سرورق | ہمارے بارے | سابقہ شمارے | رابطہ
ماہنامہ دختران اسلام > جنوری 2008 ء > فرمان الٰہی و فرمان نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم
ماہنامہ دختران اسلام : جنوری 2008 ء
> ماہنامہ دختران اسلام > جنوری 2008 ء > فرمان الٰہی و فرمان نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

فرمان الٰہی و فرمان نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

وَاِذْ نَجَّيْنٰکُمْ مِّنْ اٰلِ فِرْعَوْنَ يَسُوْمُوْنَکُمْ سُوْءَ الْعَذَابِ يُذَبِّحُوْنَ اَبْنَآءَ کُمْ وَيَسْتَحْيُوْنَ نِسَآءَ کُمْ ط وَفِيْ ذٰلِکُمْ بَلَآءٌ مِّنْ رَّبِّکُمْ عَظِيْمٌo وَاِذْ فَرَقْنَا بِکُمُ الْبَحْرَ فَاَنْجَيْنٰکُمْ وَاَغْرَقْنَآ اٰلَ فِرْعَوْنَ وَاَنْتُمْ تَنْظُرُوْنَo وَاِذْ وٰعَدْنَا مُوْسٰی اَرْبَعِيْنَ لَيْلَةً ثُمَّ اتَّخَذْتُمُ الْعِجْلَ مِنْم بَعْدِه وَاَنْتُمْ ظٰلِمُوْنَo ثُمَّ عَفَوْنَا عَنْکُمْ مِّنْم بَعْدِ ذٰلِکَ لَعَلَّکُمْ تَشْکُرُوْنَo وَاِذْ اٰتَيْنَا مُوْسَی الْکِتٰبَ وَالفُرْقَانَ لَعَلَّکُمْ تَهْتَدُوْنَo

(البقره، 2 : 49 - 53)

’’اور (وہ وقت بھی یاد کرو) جب ہم نے تمہیں قومِ فرعون سے نجات بخشی جو تمہیں انتہائی سخت عذاب دیتے تھے تمہارے بیٹوں کو ذبح کرتے اور تمہاری بیٹیوں کو زندہ رکھتے تھے، اور اس میں تمہارے پروردگار کی طرف سے بڑی (کڑی) آزمائش تھی۔ اور جب ہم نے تمہیں (بچانے کے) لیے دریا کو پھاڑ دیا سو ہم نے تمہیں (اس طرح) نجات عطا کی اور (دوسری طرف) ہم نے تمہاری آنکھوں کے سامنے قومِ فرعون کو غرق کر دیا۔ اور (وہ وقت بھی یاد کرو) جب ہم نے موسیٰ (علیہ السلام) سے چالیس راتوں کا وعدہ فرمایا تھا پھر تم نے موسیٰ (علیہ السلام کے چلّۂِ اعتکاف میں جانے) کے بعد بچھڑے کو (اپنا) معبود بنا لیا اور تم واقعی بڑے ظالم تھے۔ پھر ہم نے اس کے بعد (بھی) تمہیں معاف کر دیا تاکہ تم شکرگزار ہو جاؤ۔ اور جب ہم نے موسیٰ (علیہ السلام) کو کتاب اور حق و باطل میں فرق کرنے والا (معجزہ) عطا کیا تاکہ تم راہ ہدایت پاؤ‘‘

(ترجمہ عرفان القرآن)

(فرمان نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

عَنِ اَبِيْ هُرَيْرَةَ رَضِيَ اللّٰهُ عَنْهُ عَنِ النَّبِیِّ صلی الله عليه وآله وسلم قَالَ: کَانَ رَجَلٌ يُسْرِفُ عَلَی نَفْسِهِ فَلَمَّا حَضَرَهُ الْمَوْتُ قَالَ لِبَنِيْهِ: اِذَا اَنَا مِتُّ فَاَحْرِ قُوْنِيْ ثُمَّ اطْحَنُوْنِيْ ثُمَّ ذَرُّوْنِيْ فِی الرِّيْحِ، فَوَاللّٰهِ لَئِنْ قَدَرَ عَلَيَ رَبِّيْ لَيُعَذِّبَنِيْ عَذَابًا مَا عَذَّبَهُ اَحَدًا، فَلَمَّا مَاتَ فُعِلَ بِهِ ذَلِکَ، فَاَمَرَ اللّٰهُ الْاَرْضَ فَقَالَ: اجْمَعِی مَافِيْکَ مِنْهُ فَفَعَلَتْ فَاِذَا هُوَ قَائِمٌ فَقَالَ: مَا حَمَلَکَ عَلَی مَاَصَنَعْتَ؟ قَالَ: يَارَبِّ خَشْيَتُکَ، اَوْ قَالَ: مَخَافَتُکَ يَا رَبِّ فَغَفَرَلَهُ. (مُتَّفَقٌ عَلَيْهِ)

’’حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: ایک آدمی اپنے اوپر

^^ اوپر چليں ^^

^^ فہرست ^^

>> اگلا صفحہ >>


This page was published on Jan 8, 2008





islam quran sunnah hadith urdu english pakistan punjab lahore

© 1980 - 2022 Minhaj-ul-Quran International.


Warning: mysqli_close() expects parameter 1 to be mysqli, string given in /home/minhajki/public_html/minhaj.info/di/index.php on line 132