[ ماہنامہ دختران اسلام ] [ سہ ماہي العلماء ]      

   سرورق
   ہمارے بارے
   تازہ شمارہ
   سابقہ شمارے
   مجلس ادارت
   تازہ ترین سرگرمیاں
   خریداری
   تبصرہ و تجاويز
   ہمارا رابطہ



Google
ماہنامہ منہاج القرآن > اپریل 2015 ء > کتبِ حدیثِ نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی اقسام
ماہنامہ منہاج القرآن : اپریل 2015 ء
> ماہنامہ منہاج القرآن > اپریل 2015 ء > کتبِ حدیثِ نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی اقسام

کتبِ حدیثِ نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی اقسام

محمد شعیب بزمی

حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے فرامین و اعمال کو مختلف اوقات میں کثیر ائمہ کرام نے اپنے اپنے انداز سے جمع فرمایا۔ ان مختلف انداز اور اسالیب کی بناء پر کتب حدیث کی متعدد اقسام منظر عام پر آئیں۔ ذیل میں کتب حدیث کی اقسام اور ان اقسام کی معروف و متداول کتب کے نام درج کئے جارہے ہیں۔ اِن کو بیان کرنے کا مقصود یہ ہے کہ جب ہم حدیث کی کسی بھی کتاب کا مطالعہ کریں تو ہمیں معلوم ہو کہ اس کتاب کا اسلوب کیا ہے اور اس کو مرتب کرتے ہوئے ائمہ حدیث نے کس بات کو پیش نظر رکھا۔ نیز اس سے یہ امر بھی واضح ہوتا ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی حدیث مبارکہ کی حفاظت کی ذمہ داری اللہ رب تعالیٰ نے اپنے ذمہ کرم پرلے رکھی ہے جس طرح قرآن کریم کی حفاظت کی ذمہ داری اِنَّا نَحْنُ نَزَّلْنَا الذِّکْرَ وَ اِنَّا لَهُ لَحَافِظُوْن کے مطابق اپنے ذمہ کرم پر لے رکھی ہے۔

ائمہ حدیث نے درج ذیل اسالیب کے تحت درج ذیل کتب حدیث مرتب کیں:

  1. الاجزاء
  2. الموطات والمصنفات
  3. المسانید
  4. الصحاح
  5. الجوامع
  6. السنن
  7. کتب السنۃ
  8. المستدرکات
  9. المستخرجات
  10. کتب الجمع
  11. کتب الاطراف
  12. کتب الزوائد
  13. کتب الاحکام
  14. کتب الاذکار والادعیۃ
  15. کتب الترغیب والترہیب
  16. کتب الزہد
  17. کتب احادیث المشتہرۃ
  18. کتب الاحادیث القدسیۃ
  19. کتب احادیث المسلسلۃ
  20. کتب احادیث المتواترۃ
  21. کتب المراسیل
  22. کتب دلائل النبوۃ
  23. رود اسباب الحدیث
  24. کتب الناسخ والمنسوخ
  25. کتب اختلاف الحدیث
  26. کتب تخریج الحدیث
  27. کتب العلل
  28. کتب احادیث الموضوعۃ
  29. کتب غریب الحدیث
  30. کتب اعراب الحدیث
  31. کتب الطب النبوی

1۔الاجزاء

ایسی کتب جو کسی شخص کی مرویات، یا ایک موضوع کی روایات، یا ایک حدیث کی تمام اسانید اور متون پر مشتمل ہوں۔ درج ذیل ’’اجزائ‘‘ نہایت معروف و متداول ہیں:

  1. جزء حدیث سفیان بن عیینہ (198ہجری)
  2. جزء الحسن بن العرفۃ العبدی (157 ہجری)
  3. جزء محمد بن عاصم الاصبحانی (262 ہجری)
  4. جزء احمد بن عصام (272 ہجری)
  5. جزء فی طرق حدیث من کذب علی متعمدا فلیتبوا مقعدہ من النار، ابن حجر العسقلانی (852 ہجری)
  6. جزء فیہ طرق حدیث طلب العلم فریضۃ علی کل مسلم، امام سیوطی (911ہجری)

2۔الموطات والمصنفات

حدیث کی وہ کتب جو حدیث نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے ساتھ ساتھ صحابہ کرام رضی اللہ عنہم اور تابعین رضی اللہ عنہم کے اقوال پر مشتمل ہوتی ہیں مثلاً

  1. الموطا لامام مالک (179 ہجری)
  2. مصنف امام عبدالرزاق بن ہمام (211 ہجری)
  3. مصنف امام ابوبکر بن ابی شیبۃ (235 ہجری)

3۔المسانید

حدیث کی وہ کتابیں جن میں مذکور احادیث، حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی طرف منسوب کی جاتی ہیں۔ یعنی یہ مرفوع احادیث پر مشتمل کتابیں ہوتی ہیں جیسے

  1. مسند عبداللہ بن المبارک (181 ہجری)
  2. مسند ابو داؤد الطیالسی (204 ہجری)
  3. مسند ابو یعلی الموصلی (207 ہجری)
  4. مسند عبداللہ بن الزبیر الحمیدی (219 ہجری)
  5. مسند خلیفۃ بن خیاط (240 ہجری)
  6. مسند الامام احمد بن حنبل (240 ہجری)
  7. مسند ابوبکر احمد بن البزار (292 ہجری)

4۔الصحاح

حدیث کی وہ کتابیں جو صحیح احادیث نبوی پر مشتمل ہوں:

  1. صحیح الامام البخاری (256 ہجری)
  2. صحیح الامام مسلم (261 ہجری)
  3. صحیح الامام ابن خزیمۃ (311 ہجری)
  4. صحیح الامام سعید بن عثمان (313 ہجری)
  5. صحیح الامام ابن حبان (345 ہجری)

5۔الجوامع

حدیث کی وہ کتابیں جن کی ترتیب فقہی ابواب پر کی جاتی ہیں۔ یہ کتب العقائد، الاحکام، الرقائق، آداب الاکل والشراب، السفر والمقام، مایتعلق بالتفسیر، التاریخ، والسیر، الفتن، المناقب والمثالب پر مشتمل ہوتی ہیں۔ مثلاً

  1. الجامع صحیح الامام البخاری (256 ہجری)
  2. الجامع الامام ابی عیسی الترمذی (279 ہجری)

6۔ السنن

حدیث کی ان کتابوں کی ترتیب بھی فقہی ابواب پر کی جاتی ہے مگر ان میں الایمان، الطہارۃ، الصلاۃ، الزکاۃ کے ابواب شامل ہوتے ہیں۔ جیسے

  1. سنن الدارمی (255 ہجری)
  2. سنن ابن ماجۃ (273 ہجری)
  3. سنن ابی داؤد (285 ہجری)
  4. سنن النسائی (303 ہجری)
  5. سنن الکبریٰ الامام البیہقی (658 ہجری)

7۔کتب السنۃ

حدیث کی وہ کتابیں جن میں اتباع نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور بدعات سے اجتناب کی احادیث ہوں۔ مثلاً

  1. الرد علی الجہمیۃ الامام الدارمی (280 ہجری)
  2. السنۃ ابن ابی عاصم (287 ہجری)
  3. کتاب السنۃ عبداللہ بن احمد الشیبانی (290 ہجری)

8۔المستدرکات

حدیث کی ایسی کتب جن میں کسی کتاب کی احادیث پر استدراک کیا جاتا ہے۔ مثلاً

  1. الالزامات الحافظ الدار قطنی (385 ہجری)
  2. المستدرک الامام الحاکم (405 ہجری)

9۔المستخرجات

حدیث کی ایسی کتاب جس کا مصنف کسی کتاب کی احادیث اپنی سند سے بیان کرتا ہے۔ مثلاً

  1. المستخرج للحافظ ابی علی الحسن الماسرجسی (365 ہجری) استخرج علی صحیحین۔
  2. المستخرج للحافظ ابی بکر احمد بن ابراہیم الاسماعیلی (371ہجری) استخرج علی الصحیحین۔
  3. المستخرج للحافظ ابی عوانۃ یعقوب بن اسحاق النیسابوری (316 ہجری) استخرج علی صحیح مسلم۔
  4. المستخرج للحافظ ابی حامد احمد بن محمد الہروی (355 ہجری) استخرج علی صحیح مسلم۔

10۔ کتب الجمع

حدیث کی ایسی کتابیں جن میں حدیث کی کچھ کتب کو جمع کیا جاتا ہے۔ جیسے

  1. جامع الاصول، الامام ابن الاثیر (606 ہجری)

اس کتاب میں صحیحین، موطا امام مالک، سنن ابی داؤد، سنن النسائی، جامع الترمذی کی احادیث کی سندوں کو حذف کرکے متون کو فقہی ابواب پر جمع کیا گیا ہے اور ابواب کی ترتیب حروف تہجی پر قائم کی گئی ہے۔

  1. جامع المسانید والسنن حافظ ابن کثیر (774 ہجری)۔ اس کتاب میں اصول الستۃ، مسند احمد، مسند ابی یعلی، مسند البزار، المعجم الکبیر وغیرہ کی احادیث جمع کی گئی ہیں۔

11۔کتب الاطراف

یہ حدیث نبوی کی ایسی کتب ہیں جن میں حدیث کا کچھ حصہ بیان کیا جاتا ہے، جس کے ذریعے باقی حدیث کا حصہ معلوم ہوجائے کہ یہ حدیث کس کتاب میں موجود ہے۔ مثلاً

  1. کتاب تحفۃ الاشراف بمعرفۃ الاطراف الامام الحافظ جمال الدین ابی الحجاج یوسف بن الزکی عبدالرحمن بن یوسف المزی (742 ہجری)۔ یہ کتاب اصول ستہ اور ان کے مصنفین کی مزید کچھ کتب کی اطراف پر مشتمل ہے۔
  2. الاطراف باوہام الاطراف، حافظ ولی الدین احمد بن عبدالرحیم العراقی (826 ہجری)
  3. النکت الظراف علی الاطراف حافظ ابن حجر (852 ہجری)
  4. اطراف المسند المعتلی باطراف المسند الحنبلی، حافظ ابن حجر (852 ہجری)
  5. اتحاف المہرۃ بالفوائد المبتکرۃ من اطراف العشرۃ حافظ ابن الحجر (852 ہجری)۔

امام ابن حجر کی یہ کتاب درج ذیل کتب کے اطراف پر مشتمل ہے:

  1. الموطا لامام مالک
  2. مسند الشافعی
  3. مسند احمد
  4. مسند الدارمی
  5. صحیح ابن خزیمۃ
  6. منتقی ابن جارود
  7. صحیح ابن حبان
  8. مستدرک الحاکم
  9. مستخرج ابی عوانۃ
  10. شرح معانی الاثار لطحاوی
  11. سنن الدار قطنی

کتب الزوائد

حدیث نبوی کی ایسی کتب جن میں کچھ کتب حدیث کی احادیث پر کسی کتاب یا کتب سے زائد احادیث جمع کی جاتی ہیں۔ مثلاً

i۔ مجمع الزوائد ومنبع الفوائد، حافظ نور الدین علی بن ابی بکر الہیثمی (807 ہجری)

اس کتاب میں امام ہیثمی نے پہلے زوائد پر پانچ کتب تحریر کیں: پہلی کتاب میں، مسند احمد سے ایسی احادیث جمع کی جو اصول ستہ میں موجود نہیں، اس طرح مسند بزار، مسند ابی یعلی، معجم الکبیر اور معجم الصغیر اور اوسط پر کام مکمل کیا پھر ان چھ کتب کے زوائد کو درج ذیل کتب میں آپس میں جمع کیا:

  1. غایۃ المقصد فی زوائد الامام احمد (مسند احمد) 2
  2. البحر الزخار فی زوائد البزار (مسند البزار)
  3. المقصد الاعلی فی زوائد ابی یعلی (مسند ابی یعلی)
  4. البدر المنیر فی زوائد المجعم الکبیر (لطبرانی)
  5. مجمع البحرین فی زوائد المعجمین (الصغیر والاوسط لطبرانی)

ii۔ اتحاف الخیرۃ المہرۃ بزوائد المسانید العشرۃ حافظ شہاب الدین احمد بن ابی بکر البوصیری (840 ہجری)۔

اس کتاب میں دس مسانید کی اصول ستہ پر زائد احادیث جمع کی ہیں:

  1. مسند ابی داؤد الطیالسی
  2. مسند مسدد
  3. مسند الحمیدی
  4. مسند ابن عمر العدنی
  5. مسند اسحاق بن راہویۃ
  6. مسند ابی بکر بن ابی شیبۃ
  7. مسند احمدبن منیع
  8. مسند عبدبن حمید
  9. مسند الحارث بن محمد بن ابی اسامۃ
  10. المسند الکبیر لابی یعلی

iii۔ مصباح الزجاجۃ فی زوائد ابن ماجۃ حافظ البوصیری (840 ہجری)۔

اس کتاب میں سن ابن ماجہ کی صحیح البخاری، صحیح مسلم، سنن ابی داؤد، جامع الترمذی، سنن النسائی پر زائد احادیث جمع کی ہیں۔

iv۔ المطالب العالیۃ بزوائد المسانید الثمانیۃ حافظ ابن حجر (852 ہجری)

اس کتاب میں درج ذیل کتب کی اصول ستہ پر زائد احادیث جمع کیں:

  1. مسند ابی عمر العدنی
  2. مسند الحمیدی
  3. مسند مسدد
  4. مسند الطیالسی
  5. مسند ابن منیع
  6. مسند ابن ابی شیبۃ
  7. مسند عبد بن حمید
  8. مسند الحارث

13۔کتب الاحکام

یہ حدیث نبوی کی ایسی کتب ہیں جو صرف احکام کی احادیث پر مشتمل ہیں۔ مثلاً

  1. المنتقی من السنن المسندۃ عن رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم
  2. العمدۃ فی الاحکام فی معالم الحلال والحرام حافظ عبدالغنی بن عبدالرحمن المقدسی (600 ہجری)
  3. الالمام باحادیث الاحکام حافظ تقی الدین بن دقیق العید (702 ہجری)
  4. تقریب الاسانید وترتیب المسانید لحافظ زین الدین ابی الفضل عبدالرحیم العراقی (725 ہجری)
  5. بلوغ المرام من ادلۃ الاحکام لحافظ ابن حجر (852 ہجری)

14۔کتب الاذکار والادعیۃ

حدیث نبوی کی ایسی کتب جو صرف ذکر و اذکار اور دعاؤں کی احادیث پر مشتمل ہیں۔ مثلاً

  1. عمل الیوم واللیلۃ لامام النسائی (303 ہجری)
  2. عمل الیوم واللیلۃ احمدبن محمد الدینوری، ابن السنی (364 ہجری)
  3. الاذکار الامام محی الدین ابی زکریا یحی بن شرف النووی (676 ہجری)
  4. وظائف الیوم واللیلۃ حافظ السیوطی (911 ہجری)

15۔ کتب الترغیب والترہیب

حدیث نبوی کی ایسی کتب جو صرف ترغیب و ترہیب کی احادیث پر مشتمل ہیں مثلاً

  1. التوبیخ والتنبیہ، عبداللہ بن محمد جعفر بن حبان المعروف بابی الشیخ الاصبہانی (369 ہجری)
  2. الترغیب والترہیب، ابوالقاسم، اسماعیل بن محمد بن الفضل القرشی الاصبہانی (535 ہجری)
  3. الترغیب والترہیب حافظ زکی الدین عبدالمنعم المنذری (656 ہجری)

16۔ کتب الزہد

حدیث نبوی کی ایسی کتب جو دنیا سے بے رغبتی اور طلبِ آخرت کی احادیث پر مشتمل ہوں۔

  1. الزہد الامام عبداللہ بن المبارک (181 ہجری)
  2. الزہد الامام وکیع بن الجراح (198 ہجری)
  3. الزہد الامام احمد بن حنبل (240 ہجری)
  4. الزہد الکبیر الامام البیہقی (458 ہجری)

17۔ کتب احادیث المشتہرۃ

حدیث نبوی کی ایسی کتب جو صرف مشہور عام احادیث پر مشتمل ہیں (صحیح، ضعیف، موضوع)۔

  1. اللالی المنثورۃ فی الاحادیث المشہورۃ حافظ محمد بن عبداللہ الزرکشی (794 ہجری)
  2. المقاصد الحسنۃ فی بیان کثیر من الاحادیث المشتہرۃ علی الالسنۃ حافظ محمدبن عبدالرحمن السخاوی (902 ہجری)
  3. الدرالمنثور فی الاحادیث المشتہرۃ للسیوطی (911 ہجری)
  4. کشف الخفاء ومزیل الالباس الشیخ اسماعیل محمد بن العجلونی (1162 ہجری)

18۔کتب الاحادیث القدسیۃ

حدیث نبوی کی ایسی کتب جو صرف احادیث قدسیہ پر مشتمل ہیں مثلاً

  1. الاربعین الالہیۃ لابی الحسن علی بن المفضل المقدسی (611 ہجری)
  2. الاتحافات السنیۃ بالاحادیث القدسیۃ لحافظ عبالرؤف المناوی (1013 ہجری)

19۔ کتب احادیث المسلسلۃ

حدیث نبوی کی ایسی کتب جو مسلسل احادیث پر مشتمل ہیں۔

  1. العذاب السلسل فی الحدیث المسلسل الامام شمس الدین محمدبن احمد الذہبی (748 ہجری)
  2. الجواہر المکلکلۃ فی الاخبار المسلسلۃ السخاوی (902 ہجری)

20۔ کتب احادیث المتواترۃ

حدیث نبوی کی ایسی کتب جو متواتر احادیث پر مشتمل ہیں جیسے

  1. ازہار المتناثرۃ فی الاحادیث المتواترۃ السیوطی (911 ہجری)
  2. لقط اللالی المتناثرہ فی الاحادیث المتواترۃ، علامہ محمد مرتضی الزبیدی (1205 ہجری)
  3. نظم المتناثرۃ فی الاخبار المتواترۃ الشیخ محمد بن جعفر الکتانی (1382 ہجری)

21۔کتب المراسیل

وہ کتب حدیث جو مرسل احادیث پر مشتمل ہیں مثلاً

  1. المراسیل لابی داؤد السجستانی (285 ہجری)
  2. المراسیل حافظ ابی محمد عبدالرحمن بن ابی حاتم محمد بن ادریس الرازی (327 ہجری)
  3. جامع التحصیل فی احکام المراسیل حافظ صلاح الدین سعید بن خلیل بن کیکلدی العلائی (761 ہجری)
  4. تحفۃ التحصیل فی ذکر المراسیل حافظ ولی الدین احمد بن عبدالرحیم العراقی (826 ہجری)

22۔کتب دلائل النبوۃ

ایسی کتب حدیث نبوی جو معجزات نبوی کی احادیث پر مشتمل ہوں:

  1. دلائل النبوۃ الامام جعفر بن محمد الفریابی (301 ہجری)
  2. دلائل النبوۃ حافظ احمد بن عبداللہ المعروف بابی نعیم الاصبہانی (430 ہجری)
  3. دلائل النبوۃ ابوبکر احمد بن الحسین البیہقی (458 ہجری)

23۔کتب ورود اسباب الحدیث

حدیث نبوی کی ایسی کتب جن میں احادیث بیان کرنے کے اسباب بیان کئے جاتے ہیں (جیسے قرآن کریم کی آیات کے اسباب نزول)۔

  1. سبب ورود الحدیث الامام السیوطی (911 ہجری)
  2. البیان والتعریف فی اسباب ورود الحدیث الشریف الشیخ ابراہیم بن محمد (1110 ہجری)

24۔ کتب الناسخ والمنسوخ

حدیث نبوی کی ایسی کتب جو احادیث ناسخہ اور منسوخہ پر مشتمل ہیں:

  1. الناسخ والمنسوخ الامام ابی حفص عمر بن شاہین (385 ہجری)
  2. الاعتبار فی بیان الناسخ والمنسوخ من الاثار ابوبکر محمد بن موسی الحازمی (584 ہجری)

25۔کتب اختلاف الحدیث

حدیث نبوی کی ایسی کتب جن میں ایسی احادیث بیان کی جاتی ہیں جو ظاہری طور پر متعارض اور متضاد معلوم ہوتی ہیں، ان کتب میں وہ احادیث توافق اور دلائل سے جمع کی جاتی ہے۔

  1. اختلاف الحدیث الامام ابی عبداللہ محمد بن ادریس الشافعی (204 ہجری)
  2. تاویل مختلف الحدیث الامام الحافظ عبداللہ بن مسلم بن قتیبۃ الدینوری (276 ہجری)
  3. مشکل الاثار الامام ابی جعفر بن محمد الطحاوی (321 ہجری)

26۔ کتب تخریج الحدیث

حدیث نبوی کی ایسی کتب جو احادیث کی تخریج (کسی حدیث کی تمام یا زیادہ تر متون اور اسانید کوجمع کرکے اہل علم و نقاد حدیث اس پر حکم صادر کرتے ہیں) پر مشتمل ہوں۔

  1. نصب الرایۃ لاحادیث الہدایۃ الامام الحافظ جمال الدین عبداللہ بن یوسف الزیلعی (762 ہجری)
  2. المعتبر فی تخریج احادیث المنہاج والمختصر حافظ بدرالدین محمد بن عبداللہ الزرکشی (794 ہجری)
  3. البدر المنیر فی تخریج احادیث الرافعی الکبیر حافظ عمر بن علی الانصاری ابن الملقن (804 ہجری)
  4. الکافی الشاف فی تخریج احادیث الکشاف حافظ ابن حجر (852 ہجری)
  5. نتائج الافکار فی تخریج احادیث الاذکار احادیث الاذکار حافظ ابن حجر (852 ہجری)
  6. تخریج احادیث العادلین حافظ السخاوی (902 ہجری)
  7. مناہل الصفاء فی تخریج الشفاء حافظ السیوطی (911 ہجری)

27۔ کتب العلل

حدیث نبوی کی ایسی کتب جن میں احادیث کی علل بیان کی جاتی ہیں:

  1. کتاب العلل الحدیث الامام الحافظ عبدالرحمن بن ابی حاتم الرازی (327 ہجری)
  2. العلل الحافظ علی بن عبداللہ المدینی (234 ہجری)
  3. العلل الحافظ ابوالحسن علی بن عمر الدار قطنی (385 ہجری)
  4. العلل المتناہیۃ فی الاحادیث الواہیۃ الامام عبدالرحمن بن علی المعروف بابن الجوزی (597 ہجری)

28۔ کتب احادیث الموضوعۃ

ایسی کتب جن میں حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی طرف منسوب ایسے اقوال و اعمال درج کئے گئے ہوں جو حقیقتاً آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے صادر ہی نہ ہوئے ہوں۔ ان کو ذکر کرنے کا مقصود ان اقوال و اعمال پر بھروسہ و اعتماد نہ کرنے کی طرف توجہ دلانا ہوتا ہے کہ یہ جھوٹی باتیں ہیں، ان پر اعتماد نہ کیا جائے۔

  1. کتاب معرفۃ التذکرۃ فی الاحادیث الموضوعۃ الامام محمد بن طاہر المقدسی (507 ہجری)
  2. الموضوعات الکبری عبدالرحمن بن علی الجوزی (597 ہجری)
  3. موضوعات الصاغانی الامام الحسن بن محمد الصاغانی (650 ہجری)
  4. الالی المصنوعۃ فی الاحادیث الموضوعۃ السیوطی (911 ہجری)
  5. الاسرار المرفوعۃ فی الاخبار الموضوعات الکبری) العلامۃ الملا علی القاری (1014 ہجری)
  6. المصنوع فی معرفۃ الحدیث الموضوع (الموضوعات الصغری) العلامۃ الملا علی قاری۔
  7. الفوائد المجموعۃ فی الاحادیث الموضوعۃ العلامۃ محمد بن علی الشوکانی (1250 ہجری)

29۔کتب غریب الحدیث

حدیث کی ایسی کتب جن میں احادیث کے مشکل الفاظ کی وضاحت کی جائے۔

  1. غریب الحدیث ابو عبیدالقاسم بن سلام الہروی (224 ہجری)
  2. الفائق فی غریب الحدیث ابوالقاسم جاراللہ محمود بن عمر الزمخشری (538 ہجری)
  3. النہایۃ فی غریب الحدیث والاثر الامام ابن الاثیر الجزری (606 ہجری)
  4. غریب الحدیث حافظ ابن حجر (852 ہجری)

30۔ کتب اعراب الحدیث

حدیث کی ایسی کتب جن میں حدیث کے مشکل مفردات اور جملوں کی نحوی و لغوی تشریح اور وضاحت کی جائے۔

  1. اعراب الحدیث النبوی الامام ابوالبقاء عبداللہ بن الحسین العکبری (616 ہجری)۔ اس کتاب میں، کتاب جامع المسانید ابن الجوزی کے جملوں کی نحوی و لغوی تشریح کی گئی ہے۔ علامہ ابن جوزی کی یہ کتاب زیادہ تر احادیث مسند احمد، وصحیح البخاری، وصحیح مسلم، وجامع الترمذی پر مشتمل ہے۔
  2. شواہد التوضیع والتصحیح لمشکلات الجامع الصحیح الامام ابی عبداللہ محمد بن جمال الدین بن مالک (672 ہجری) اس کتاب میں صحیح بخاری کے مشکل جملوں کی نحوی و لغوی تشریح کی گئی ہے۔
  3. عقود الزبر جد علی مسند الامام احمد حافظ السیوطی (911 ہجری)۔ اس کتاب میں مسند احمد کی احادیث کے مشکل جملوں اور مفردات کی نحوی و لغوی تشریح کی گئی ہے۔

31۔ کتب الطب النبوی

حدیث نبوی کی ایسی کتب جو ایسی احادیث پر مشتمل ہیں جن میں کسی مرض کا علاج بیان کیا گیا ہے۔ مثلاً

  1. کتاب الطب لامام حافظ ابونعیم الاصبہانی (430 ہجری)
  2. کتاب الطب من الکتاب والسنۃ علامۃ موفق الدین بن عبداللطیف البغدادی (269 ہجری)
  3. کتاب الطب النبوی علامۃ ابن القیم الجوزی (751 ہجری)
  4. مختصر فی الطب النبوی الحافظ السیوطی (911 ہجری)

^^ اوپر چليں ^^

^^ فہرست ^^

 << پچھلا صفحہ <<

>> اگلا صفحہ >>




کاپی رائٹ © 1980 - 2017 ، منہاج انٹرنیٹ بیورو، جملہ حقوق محفوظ ہیں۔
Web Developed By: Minhaj Internet Bureau