[ ماہنامہ دختران اسلام ] [ سہ ماہي العلماء ]      

   سرورق
   ہمارے بارے
   تازہ شمارہ
   سابقہ شمارے
   مجلس ادارت
   تازہ ترین سرگرمیاں
   خریداری
   تبصرہ و تجاويز
   ہمارا رابطہ



Google
ماہنامہ منہاج القرآن > نومبر 2019 ء > منہاج یونیورسٹی:لائبریری سائنسز و نالج اکانومی پر دو روزہ انٹرنیشنل کانفرنس
ماہنامہ منہاج القرآن : نومبر 2019 ء
> ماہنامہ منہاج القرآن > نومبر 2019 ء > منہاج یونیورسٹی:لائبریری سائنسز و نالج اکانومی پر دو روزہ انٹرنیشنل کانفرنس

منہاج یونیورسٹی:لائبریری سائنسز و نالج اکانومی پر دو روزہ انٹرنیشنل کانفرنس

خصوصی رپورٹ

منہاج یونیورسٹی لاہور کے زیر اہتمام لائبریری سائنسز اور نالج اکانومی کے موضوع پر دورہ روزہ انٹرنیشنل کانفرنس 19 اور 20 ستمبر 2019ء کو منعقد ہوئی۔ کانفرنس میں آسٹریلیا، امریکہ، سری لنکا، نائیجیریاسے تعلق رکھنے والے سکالرز نے شرکت کی اور مقالہ جات پیش کیے۔ اس سیمینار میں بین الاقوامی سکالرز کے ساتھ منہاج یونیورسٹی کی مختلف فیکلیٹیز نے سوال وجواب کے سیشنز بھی ہوئے۔

  • بین الاقوامی کانفرنس کے پہلے روز کانفرنس کی صدارت ہائر ایجوکیشن کمیشن پنجاب کے چیئرمین ڈاکٹر فضل احمد خالد نے کی۔ انہوں نے اہم اور اچھوتے موضوع پر کانفرنس کا انعقاد کرنے پر منہاج یونیورسٹی لاہور کی ایڈمنسٹریشن کو مبارکباد دی اور اپنے بھرپور تعاون کا یقین دلایا۔
  • منہاج یونیورسٹی لاہور کے ڈپٹی چیئرمین ڈاکٹر حسین محی الدین قادری نے دو روزہ بین الاقوامی کانفرنس کے پہلے روز کانفرنس میں شرکت کرنے پر صوبائی وزراء راجہ یاسر ہمایوں، میاں اسلم اقبال، ڈاکٹر فضل خالد اور آسٹریلیا، سری لنکا، نائیجیریا، سائوتھ افریقہ سمیت ملک بھر کی نجی و سرکاری یونیورسٹیوں کے ممتاز سکالرز کو خوش آمدید کہا۔ انہوں نے کہا کہ منہاج یونیورسٹی اپنے طلبہ و طالبات کو بین الاقوامی کانفرنسز کے ذریعے عالمی سطح پر مختلف شعبہ جات میں ہونے والی تحقیق اور جدید ریسرچ کے بارے میں بین الاقوامی سکالرز کو مدعو کرکے آگاہ کرتی رہتی ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ ہمارے طلبہ کی نظر دنیا کی ممتاز یونیورسٹیوں میں ہونے والی تحقیق پر مرکوز ہو۔
  • صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن کمیشن راجہ یاسر ہمایوں نے خطاب ہوئے کہا کہ دنیا میں تحقیق پر مبنی تعلیمی ڈگریوں کی قدر ہے، پاکستان ترقی کے اہداف حاصل کرنے کے لیے طلبہ کو ریسرچ بیسڈ نالج کی طرف آنا ہوگا۔ حکومت سرکاری و نجی شعبہ میں کام کرنے والے اعلیٰ تعلیمی اداروں کو بین الاقوامی تعلیمی، تحقیقی معیار تک لانے کے لیے ہر ممکن وسائل اور تکنیکی مدد فراہم کرے گی۔
  • کانفرنس سے صوبائی وزیر اطلاعات میاں اسلم اقبال نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ طلبہ کو بامقصد تعلیم و تربیت فراہم کرنے والے اعلیٰ تعلیمی اداروں کے مسائل کے حل میں کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں کریں گے۔ پاکستان میں انفارمیشن ٹیکنالوجی اور انفارمیشن مینجمنٹ کے شعبے میں جدید اصلاحات کی ضرورت ہے۔ ترقی، تحقیق اور ٹیکنالوجی سے وابستہ ہے۔
  • پہلے روز کانفرنس سے وائس چانسلر ڈاکٹرمحمد اسلم غوری، پرووائس چانسلر ڈاکٹر شاہد سرویا نے بھی اظہار خیال کیا۔نقابت کے فرائض ڈاکٹر سائرہ حنیف سرویا نے انجام دئیے۔کانفرنس کی پینل ڈسکشن میں پی یو سے ڈاکٹر خالد محمود، بہاولپور سے ڈاکٹر روبینہ بھٹی، کامیسٹ سے ڈاکٹر محمد طاہر نجمی، ڈی جی نیشنل لائبریری سید غیورحسین، سرگودھا یونیورسٹی سے ڈاکٹر ہارون ادریس نے حصہ لیا۔
  • عالمی کانفرنس کے دوسرے روز اختتامی سیشن میں منہاج القرآن انٹرنیشنل کے صدر ،ڈپٹی چیئرمین ایم یو ایل ڈاکٹر حسین محی الدین قادری نے ’’لائبریری سائنسز نالج اکانومی ‘‘کے موضوع پر منعقدہ بین الاقوامی سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا:

ترقی یافتہ ممالک کے عوام انتہائی شوق سے کتب کا مطالعہ کرتے ہیں۔ چین کی 80 فیصد، کینیڈا کی93 فیصد، آبادی مطالعہ کی شوقین ہے۔ پاکستان کے 32 فیصد میگزین اور ڈائجسٹ پڑھتے ہیں۔ انڈیا کے عوام ہفتہ میں 10 گھنٹے، امریکہ کے عوام 6 گھنٹے، آسٹریلیا کے عوام 6 گھنٹے، انگلینڈ کے عوام 5 گھنٹے، جرمنی، جنوبی افریقہ، ترکی کے عوام ہفتہ میں 6 گھنٹے کتب بینی میں صرف کرتے ہیں۔کتب بینی کے حوالے سے پاکستان کے عوام کی صورتحال اطمینان بخش نہیں۔ بچوں میں اوائل عمری میں مطالعہ کی عادت ڈالنے کیلئے سنجیدہ اقدامات کرنے ہوں گے۔ منہاج القرآن بچوں کو بک یوزر بنانے کے لیے ملک گیر مہم کا آغاز کر رہی ہے، اس مہم کی سرپرستی منہاج القرآن، منہاج یونیورسٹی، منہاج ایجوکیشن سوسائٹی اور جملہ فورمز کریں گے۔ بچوں کو کتب بین بنانے کے لیے والدین، اساتذہ، سوسائٹی کے دانشور طبقہ اور حکومت کو مشترکہ کوششیں اور اقدامات بروئے کار لانا ہوں گے۔

  • بین الاقوامی کانفرنس سے سابق چیئرمین پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن ڈاکٹر نظام الدین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں سکول لیول سے لے کر یونیورسٹی لیول تک کتب بینی کے کلچر کو فروغ دینے کی ضرورت ہے اور حکومت کو چاہئے کہ وہ کتاب پڑھنے کے فوائد کو نصاب کا حصہ بنائے۔
  • وائس چانسلر ہوم اکنامکس یونیورسٹی لاہو پروفیسر ڈاکٹر کنول امین تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ لائبریری کے کلچر کو فروغ دینے کے لئے ہمیں اپنی سوچ کو تبدیل کرنا ہوگا اور طلبہ کے لئے تحقیق پر مبنی سرگرمیوں کو متعارف کروانا ہوگا جس سے ہم تحقیق کے میدان میں آگے بڑھ سکیں گے۔
  • اس اہم موضوع پر کانفرنس کے انعقاد پر جملہ شرکاء نے منہاج یونیورسٹی انتظامیہ کو مبارک باد دی۔ ڈاکٹر حسین محی الدین قادری نے سیمینار کے کامیاب انعقاد پر وائس چانسلر منہاج یونیورسٹی ڈاکٹر محمد اسلم غوری اور پرو وائس چانسلر منہاج یونیورسٹی ڈاکٹر محمد شاہد سرویا کو مبارک باد دی۔

سیمینار کے اختتام پر ڈاکٹر حسین محی الدین نے سیمینار کے آرگنائزرز، بین الاقوامی ریسرچ سکالرز اور سیمینار میں مقالہ جات پیش کرنے والے محققین کو اعزازی شیلڈز اور بیسٹ پیپر ایوارڈز سے نوازا۔ اختتامی تقریب میں وائس چانسلر منہاج یونیورسٹی ڈاکٹر محمد اسلم غوری،پرو وائس چانسلر منہاج یونیورسٹی ڈاکٹر محمد شاہد سرویا، منہاج القرآن کے ناظم اعلیٰ خرم نواز گنڈاپور، مرکزی سیکرٹری اطلاعات نوراللہ صدیقی اور دیگر مرکزی قائدین نے بھی شرکت کی۔

^^ اوپر چليں ^^

^^ فہرست ^^

 << پچھلا صفحہ <<

>> اگلا صفحہ >>




کاپی رائٹ © 1980 - 2017 ، منہاج انٹرنیٹ بیورو، جملہ حقوق محفوظ ہیں۔
Web Developed By: Minhaj Internet Bureau